محفوظات برائے ‘تاثراتی مضامین’ زمرہ

PostHeaderIcon 17ستمبر – سقوط حیدرآباد : – محسن خان

17ستمبرسقوط حیدرآباد

محسن خان
موبائیل:9397994441
ای میل:

حیدرآباد دکن کیا ہے یہ ہم سے پوچھو
اہل دل‘اہل نظر‘اہل قم سے پوچھو (عزیز النسا ء صبا)
17ستمبرریاست دکن کے عوام کے لئے انتہائی تکلیف دہ دن ہے۔اس تاریخ کانام سنتے ہی یقیناًہر اس غیور دکنی کے آنکھوں میں آنسوآجاتے ہوں گے جواپنی تاریخ سے واقف ہے اور اس پرفخر کرتا ہے۔ کس طرح ایک امیر ‘ خوشحال اور مسلم ریاست کو پولیس ایکشن کے نام پرتباہ وبرباد کردیاگیا ‘ ہزاروں عوام کا قتل عام کیاگیا ‘پردہ نشین اور عزت دار خواتین کی عصمتوں کولوٹاگیا‘لہلہاتے ہوئے کھیتوں کو تبا ہ وتاراج کردیاگیا‘ ۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon حسن فرخ : تری نواؤں میں تھا خونِ جگر کا لہو : – ڈاکٹرمحی الدین حبیبی

حسن فرخ

حسن فرخ
تری نواؤں میں تھا خونِ جگر کا لہو

ڈاکٹرمحی الدین حبیبی
حیدرآباد ۔ دکن
موبائل : 08978155985

زخم دل، زخم جگر صرف عشق کی چوٹ ہی سے اثر انداز نہیں ہوتا، یہ تو غم ذات کی بات ہوئی۔ غمِ کائنات بھی دردِ دل و درجِ جگر دے جاتا ہے۔ یہ الگ بات ہے کہ غمِ ذات کا شاعر اُسی رہ گزر کی تلاش کرتا ہے جہاں سکونِ دل لٹ جاتا ہے، لیکن غمِ کائنات بھی یوں عام ہے کہ مسائل حیات میں زیادہ تر دکھ درد ہی ملتا ہے ؂
ملے نہ درد کی دولت تو زندگی کیا ہے
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon صبح آزادی تو اجالوں کی ضامن تھی مگر؟ : – فاروق طاہر

فاروق طاہر

صبح آزادی تو اجالوں کی ضامن تھی مگر؟

فاروق طاہر
عیدی بازار ،حیدرآباد۔

09700122826

15/اگست 1947کی صبح نوید سحر لے آئی کہ ہندوستان انگریز وں کے ظلم و استبداد سے آخر کار آزاد ہوچکاہے۔ ابتدائے آفرینش سے ہندوستان کی تاریخ شکست و ریخت سے مامور ہے۔بیرونی حملہ آوروں کے لئے ہندوستان دولت و ثروت کے حصول کے لئے پرکشش محاذ کی حیثیت کا حامل رہا ہے۔تاریخ ہند کا سب سے دلکش پہلو یہ ہے کہ اکثر و بیشتر حملہ آوروں نے اپنی فتوحات کے بعد ہندوستان کو اپنا مادر وطن بنایا اور اس کے دام محبت کے اسیر ہوکر یہیں پیوند خاک ہوئے سوائے گوروں کے۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon سردار جعفری ۔ ظہور ذات و صفات کا شاعر : – ڈاکٹر مسعود جعفری

سردار جعفری

سردار جعفری
ظہور ذات و صفات کا شاعر

ڈاکٹر مسعود جعفری
ٹولی چوکی ۔ حیدرآباد
09949574641

سردار جعفری ترقی پسند تحریک کے ایک قدآورپیمبر تھے۔ وہ کمیو نسٹ پارٹی کے سرگرم کارکن بھی تھے۔پارٹی کے ترجمان نیا ادب سے وابستہ تھے۔ان کا ما رکسی آئڈیا لوجی پر کامل یقین تھا۔ رسویٹ یونین کے زوال تک اس اشتراکی نظریہ کے پاسبان و ترجمان رہے۔روحانیت کو خیالی جنت سمجھتے تھے۔ وہ توہمات کے قائل نہیں تھے۔ ہر چیز کو عقل کی میزان میں رکھتے تھے۔ان کی شاعری مزدوروں ،کسانوں ، کار خانوں کے کرم چا ریوں کی آواز رہی۔ وہ سحرالبیان خطیب بھی تھے۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon آہ! صادق نقوی بھی نہیں رہے : – ڈاکٹر مسعود جعفری

صادق نقوی

آہ! صادق نقوی بھی نہیں رہے

ڈاکٹر مسعود جعفری
09949574641

ڈاکٹر صادق نقوی ایک جامعاتی استاد ،جید مورخ ،شعلہ نوا خطیب ،نثر نگار اور ممتاز شاعر تھے۔وہ نصف صدی تک شہر کی ادبی ،تہذیبی و مذہبی محافل کی روح رواں رہے۔انہوں نے بچپن ، شباب اور ڈھلتی عمر کی دھوپ پرانے شہر کی بل کھاتی گلیوں ،کچے پکے مکا نوں میں گزاردی۔ان کی سرگرمیوں کا محور دارالشفا تھا۔کمال یار جنگ کی دیوڑھی میں وہ مجالس پڑھا کرتے تو لوگ اپنے رمالوں میں بہتے ہوئے آنسووں کو جذب کرتے تھے۔وہ دن رات اپنے چاہنے والوں کے درمیان گھرے رہتے۔ایک ایسا بھی وقت آیا جب وہ اپنے محبت کرنے والوں کو چھوڑ کر سات سمندر پار امریکی شکاگو میں جابسے ۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon حضرت فصاحت جنگ جلیلؔ مانک پوری : – حلیم بابرؔ


نامور استاد وشاعر :
حضرت فصاحت جنگ جلیلؔ مانک پوری

حلیم بابرؔ
محبوب نگر ۔ تلنگانہ

ایک جلیل القدر ‘ممتاز ونامور استاد شاعر کی حیثیت سے حضرت جلیل مانک پوری کانام بڑی قدر ومنزلت سے لیاجاتا ہے۔ ضلع پرتاب گڑھ یوپی کے قصبہ مانک پور کے متوطن تھے۔ حضرت جلیل مانک پوری 1862ء میں پیدا ہوئے۔ حضرت جلیل نے کم سنی میں ہی قرآن حفظ کیا۔ آپ نے اُردو اور فارسی کی تعلیم اپنے والد سے حاصل کی۔حضرت جلیل کوبچپن سے ہی شعر گوئی سے بڑی رغبت رہی۔ چناں چہ وہ کم عمری میں ہی مشاعروں میں شرکت کرنے لگے تھے۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon احساسِ مروت کی موت پرہمارامرثیہ : – صادق رضا مصباحی


صادق رضامصباحی

احساسِ مروت کی موت پرہمارامرثیہ

صادق رضا مصباحی
ممبئی – موبائل نمبر:9619034199

اقبال نے کہاتھا
ہے دل کے لیے موت مشینوں کی حکومت
احساسِ مروت کو کچل دیتے ہیں آلات
اگرہم اس شعرکا حقیقی مصداق دیکھناچاہتے ہیں تو ہم میں سے ہرایک کو آئینے کے سامنے کھڑے ہوجاناچاہیے ،آئینے میں جوچہرہ اور جو پیکر منعکس ہوگا وہ یقیناًاس شعرکے حقیقی مصداق تک پہنچادے گا ۔آئینے کی مثال دینے کی ضرورت اس لیے پیش آئی کہ ہم میں سے بیشترلوگ کم ازکم دوچہروں کے ساتھ زندگی گزاررہے ہیں اور ایسالگتاہے کہ ہم میں سے تقریباًسبھی کااحساسِ مروت کچلاجاچکاہے۔ہمیں دوسروں کی قدر وقیمت کاذرہ برابربھی احساس نہیں ،ہاں ہمارا یہ احساس اس وقت فزوں ہو جاتا ہے جب کسی سے ہمارا تعلق مادی ہوتاہے اوراس مادی تعلق کاجال مکڑی کے جالے کی طرح ہمیں ایک دوسرے سے باندھے رکھتا ہے ۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon فلمی نغمہ نگار و شاعر ڈاکٹر سی نارائن ریڈی : – ڈاکٹر مسعود جعفری

ڈاکٹر سی نارائن ریڈی

فلمی نغمہ نگار و شاعر
ڈاکٹر سی نارائن ریڈی (سی نارے) ۔ ایک خراج

ڈاکٹر مسعود جعفری
حیدرآباد ۔ دکن
09949574641

اردو کو ہمیشہ اس بات پر ناز رہے گا کہ اس کے قد و گیسو کو سنوارنے وا لوں میں صرف اہل حجاز ہی نہیں رہے۔فارسی و عربی زبان جا ننے وا لوں ہی نے اسے اپنایا۔ اس ے محبت کرنے والوں میں سنسکرت اور تلگو بولنے وا لے بھی پیش پیش رہے۔حیدرآ باد دکن کو ابتدا ہی سے یہ اعزاز یہ امتیاز حا صل رہا۔شہر قلی قطب شاہ سے 70 کیلو میٹر کے فاصلے پر واقع کوڑنگل تعلقہ میں فروکش رہنے والے حضرت دامودر ذکی اردو کے استاد شاعر رہے۔وہ تلگو ،مرہٹی ،سنسکرت کے ساتھ فارسی و اردو سے واقف تھے۔اردو ان کی مادری زبان نہیں تھی لیکن وہ اردو غزل اور ،نعت کے مستند شاعر تھے۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon ہمارا معاشرہ اور سوشل میڈیا کے منفی اثرات : – گلشن جہاں

گلشن جہاں

ہمارا معاشرہ اور سوشل میڈیا کے منفی اثرات

گلشن جہاں ۔ سنبھل

دور حاضر میں سوشل میڈیا کا استعمال ہماری زندگی کا لازمی جز بن چکا ہے ، جس کی افادیت و اہمیت سے انکار نہیں کیا جا سکتا۔اس میں کوئی شک نہیں کہ گزشتہ دہائی میں انفارمیشن ٹکنالوجی ترقی اور انٹرنیٹ کی فراوانی نے رابطوں کی دنیا میں ایک انقلاب برپا کر دیا ہے۔ایک زمانہ تھا جب دور دراز مقیم عزیز و اقارب کی خیریت جاننے کے لئے خط و کتابت کی ضرورت پیش آتی تھی اور مدتوں کے بعد خط کا جواب مل پاتا تب جا کر کچھ اطلاع حاصل ہوتی تھی۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon نامور اُستاد شاعر تنویرؔ واحدی کی یاد میں : – ڈاکٹر ضامن علی حسرتؔ

تنویرؔ واحدی

’’ میں ڈوب بھی گیا تو شفق چھوڑ جاؤں گا ‘‘
نامور اُستاد شاعر تنویرؔ واحدی کی یاد میں

ڈاکٹر ضامن علی حسرتؔ
9/16/60، احمد پورہ کالونی، نظام آباد، تلنگانہ اسٹیٹ
موبائیل : 94408823630

غزل ہر دور میں اُردو ادب کی محبوب صنف رہی ہے۔ اس کے باوجود ہمارے دانشوروں اور نقادوں نے اس کو ’’نیم وحشی صنفِ سخن‘‘ سطحی خیالات کا پلندہ بے وقت کی راگنی اور قصیدۂ معشوق قرار دیا ہے۔ تاریخ اس بات کی گواہ ہے کہ غزل سازگار فضاء میں پروان چڑھی بلکہ ناسازگار اور مخالف فضاؤں میں بھی غزل کا چراغ روشن رہا ۔ ہر دور میں غزل مقبول اور حسین رہی۔ غزل کل بھی جوان تھی ، آج بھی جوان ہے غزل۔ ہرزمانے میں محبوب اور مشہور رہی۔ غزل میں ہمہ گیری ‘ وسیع تر معنویت اوردل میں اُتر جانے کی صلاحیتوں کے پیش نظر اِسے اُردو شاعری کی آبرو کہا گیا ہے۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon انفارمیشن ٹیکنالوجی اور اردو کی موجودہ صور تحال :- جاگیردار عذرا شیرین


انفارمیشن ٹیکنالوجی اور اردو کی موجودہ صور تحال

جاگیردار عذرا شیرین
جزوقتی لکچرر و ریسرچ اسکالر
شعبۂ اردو ٗ مہاراشٹرا اودے گری کالج ٗ
اودگیر ۔ضلع لاتور۔413517
Mob:07721952754

زندگی تسلسل سے عبارت ہے ۔حال کا پتہ لگا نا دراصل ما ضی کا محاسبہ کرنا اور مستقبل کے امکانات کے سفر کو جاری رکھنا ہے۔ہر لمحہ جو تازہ ہوتا ہے اور ایک ثانیے بعد وہی لمحہ پُرانی ساعتوں میں کھو جاتا ہے۔ یہ لمحے ہمیں احساس دلاتے ہیں کہ وہ ہمارے لیے بیش قیمت ہیں۔ ان لمحوں کا اگر مثبت استعمال کیا جائے تو زندگی کی نئی منزلوں کا پتہ چلتا ہے۔ آج کی زندگی میں انسان مثبت اور منفی قوتوں کی کشمکش کا شکار ہے۔ جس نے مثبت احساس کے ساتھ زندگی گزاری ٗ اُس کے لیے دشواریاں آسان ہو گئیں ٗ اسی مثبت احساس کے تئیں اردو زبان و ادب اور اردو والوں نے ارتقاء کی مسافتیں طئے کی ہیں۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon اردو کےادیب اورنثرنگار- قسط–15: قرۃ العین – نسیم حجازی – محسن عثمانی ندوی


قسط – 15
اردو کےادیب اورنثرنگار
قرۃ العین حیدر – نسیم حجازی

پروفیسرمحسن عثمانی ندوی

اردو کے ادیب اور نثر نگار ۔ چودھویں قسط کے لیے کلک کریں

قرۃ العین حیدر (۱۹۲۸۔۱۹۹۹ء)
اردو کی منفرد مصنفہ ، دانشور ، افسانہ نگار ، ناول نگار قرۃ العین حیدر نے اپنے تجربات اور اسلوب کی ندرت اور تازہ کاری کے وسیلہ سے اپنی شناخت قائم کی ہے ، قرۃ العین حیدر کی پیدائش علی گڑھ میں ہوئی ، ان کے والد سجاد حیدر یلدرم اردو کے مشہور انشائیہ نگار اور افسانہ نویس تھے ، ’’کار جہاں دراز ہے ‘‘ میں قرۃ العین حیدر نے اپنے آباء و اجداداو ر خاندان کا تفصیل سے ذکر کیا ہے ، قرۃ العین حیدر کی والدہ نذر سجاد حیدر رسالہ ’’تہذیب نسواں ‘‘ اور ’’پھول‘‘ وغیرہ میں مضامین لکھا کرتی تھیں-
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon اخترالایمان کی نظم’’ ایک لڑکا ‘‘ کاجائزہ : – زائرحسین ثالثی

اخترالایمان

زائرحسین ثالثی

اخترالایمان کی نظم’’ ایک لڑکا ‘‘ کاجائزہ

زائرحسین ثالثی
جعفراآباد ۔ یو پی

اخترلایمان کی شہرۂ آفاق نظم’’ایک لڑکا‘‘ان کے اکثرناقدوں کے لئے توجہ کامرکزبنی رہی ہے۔شایداس لئے کہ اس معصوم لڑکے کی صورت میں،جواس نظم کامرکزی کردار ہے،انہوں نے خوداخترالایمان کی زندگی کے نشیب وفرازدیکھے ہیں۔یہ نظم اظہار ذات کابہترین نمونہ ہے،اس کاموضوع بیک وقت ماضی کی سادگی بھی ہے، عہد طفولیت کی بازیابی بھی ہے اورحال کی ریاکاری بھی۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon اب ہمیں راستہ نہیں ملتا : – جرار احمد


مضمون :
اب ہمیں راستہ نہیں ملتا

جرار احمد – ریسرچ اسکالر
شعبۂ تعلیم و تربیت،مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی، حیدرآباد

ہندوستان میں خا ص طور پر جب ہم مسلمانوں کی تعلیم کی طرف نظر کرتے ہیں تو وہ ہمیشہ کی طرح ہمیں پیچھے ہی نظر آتے ہیں،اس کا ہرگز یہ مطلب نہیں کہ روز اول سے ہی یہ قوم پچھڑی ہے، بلکہ علم کاایسا سر چشمہ اس قوم سے پھوٹا، جس نے عرب کے ریگستانوں کو سیراب کیااور پوری دنیا پر علم و حکمت کو پھیلادیا۔مسلما نوں کا تعلیمی میدان میں پیچھے نظر آنا کوئی نئی بات نہیں، بلکہ کئی دہائیاں گذر گئیں ،ان کی حالت جوں کی توں ہے ۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon عیدالفطر مبارک : – ڈاکٹر سید فضل اللہ مکرم


عیدالفطر مبارک

ڈاکٹر سید فضل اللہ مکرم

رمضان المبارک ہر سال کی طرح اس سال بھی آیا اور گزرگیا ۔
زندگی کے کئی رمضان گزرگئے ۔
کیا ہم میں کوئی تبدیلی رونما ہوئی ؟
کیا ہمارے اعمال میں کچھ سدھار آیا ؟
کیا ہم میں ہمدردی ‘ رواداری اور ایثار کا جذبہ پیدا ہوا؟
کیا یہ رمضان ہمارے لیے رحمت ‘ مغفرت اور جنت میں داخلہ کا سبب بن پاے گا ؟
اگر جواب مثبت ہوتو پھر آپ عید سعید کے حق دار ہیں۔
جہانِ اردو کی جانب سے تمام احباب کی خدمت میں
عید سعید کی مبارک باد
اللہ تعالیٰ آپ تمام کو عید کی نعمتیں ‘ رحمتیں ‘ سعادتیں اور برکتیں نصیب فرماے اور آپ کی تمام دعاوں کو قبول و مقبول فرمائیں ۔

PostHeaderIcon عہد حاضر میں تعلیمی معیار میں گراوٹ : – گلشن جہاں

گلشن جہاں

عہد حاضر میں تعلیمی معیار میں گراوٹ

گلشن جہاں۔ سنبھل

تعلیم انسانی دنیا کا وہ سرمایہ ہے ،جس کی قدر و منزلت کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا ۔یہ وہی عظیم الشان دولت ہے جس کی وجہ سے انسان کو اشرف المخلوقات ہونے کاافتخار حاصل ہے ۔انسانی تاریخ شاہد ہے کہ عقل و شعور کے تمام گوشے علم ہی سے روشن ہوتے ہیں۔گویا تعلیم ایک ایسا جامع تصور ہے جوعقل و خرد کے تمام تر پہلوؤں کو اپنے دامن میں سمیٹے ہوئے ہے۔تعلیم کا مقصد انسانی ذہنوں میں کشادگی ، نگاہوں میں بلندی اور غور و فکر کرنے کی صلاحیت کی نشونما کرنا ہوتا ہے۔جس سے افراد کی شخصیات کا کوئ پہلو اچھوتا نہ رہے اور ہمہ جہت ترقی ممکن ہو سکے۔ مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon قفسؔ سنبھلی : آج وہ یاد بے حساب آئے : – عزہ معین

قفسؔ سنبھلی

قفسؔ سنبھلی
آج وہ یاد بے حساب آئے

عزہ معین ۔سنبھل

قفسؔ سنبھلی کی آج ۱۳ جون کو اس گلستان عالم سے دائمی جدائی( وفات)کا دن ہے۔ اور کل ۱۴ جون کی پیدائش تھی۔ دنیا ئے مکافات میں ہجوم آدم روز انہ ہزاروں کی تعداد میں ادھر سے ادھر رواں دواں ہے۔کہیں زندگی کی مصروفیات ہیں اور کہیں موت وزندگی کا کھیل۔ جانے کتنے آئے اور کتنے چلے گئے ۔ نہ کوئی نشان ان کا باقی نہ کوئی نام لینے والا ۔اسی جہاں میں ایسے بھی ہیں جنھیں برس ہابرس لوگوں کے اذہان فراموش نہیں کر پاتے ۔ان کی یادیں ہمارے لئے سرمایہ حیات بن جاتی ہیں۔قلم بھی انھیں یاد کرکے آنسو بہاتے ہیں ۔انھیں قلم کے سپاہیوں میں سے ایک قفسؔ سنبھلی تھے جن کی یاد مشاعروں میں ناظم کے اشعار کے ذریعہ اور کبھی کتابوں میں ان کے خوبصورت اشعار اورحوالوں کے ذریعہ ہمارے درمیان رقص کرتی ہے ۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon اردو کےادیب اورنثرنگار – قسط – 14- اختراورینوی – عزیزاحمد:- محسن عثمانی ندوی


قسط – 14
اردو کےادیب اورنثرنگار
اختراورینوی – عزیزاحمد

پروفیسرمحسن عثمانی ندوی

اردو کے ادیب اور نثر نگار ۔ تیرھویں قسط کے لیے کلک کریں

اختر اورینوی (۱۹۱۰۔۱۹۷۰)
اختر اورینوی بہار کے ضلع گیا میں پیدا ہوئے ، کاکو قصبہ ان کا وطن تھا ، وہ افسانہ نگار بھی تھے ، ڈرامہ نویس بھی تھے ، ناول نگار بھی تھے اور شاعر بھی تھے ، اور ایک اچھے نقاد بھی تھے ، ان کے تنقیدی مضامین اور ان کے افسانوں کی وجہ سے ان کی ادبی کاوشیں یاد رکھی جائیں گی ، اردو فارسی اور انگریزی کی تعلیم گھر پر حاصل کی ، پھر وہ پٹنہ یونیورسٹی کے طالب علم رہے –
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon اردو کےادیب اورنثرنگار:قسط:13- رشید احمد-حلیم شرر -:محسن عثمانی ندوی


قسط : 13

اردو کےادیب اورنثرنگار
رشید احمد صدیقی ۔ عبد الحلیم شرر

پروفیسرمحسن عثمانی ندوی

اردو کے ادیب اور نثر نگار ۔ بارھویں قسط کے لیے کلک کریں

رشید احمد صدیقی (۱۸۹۴۔۱۹۷۷ء)
رشید احمد صدیقی اس عہد کے صاحب اسلوب ادیب اور بذلہ سنج مزاح نگار ہیں ، ان کی تحریروں میں سنجیدہ مزاح اور گلکاری اور سحر آفرینی پائی جاتی ہے ، ان کی ابتدائی تعلیم جون پور میں ہوئی-
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon تعارف :حضرت مولانا محمدانصار صاحب مدظلہ : – مفتی امانت علی قاسمیؔ


علم حدیث کا نیر تاباں
حضرت مولانا محمدانصار صاحب مدظلہ
شیخ الحدیث دارالعلوم حید رآباد

مفتی امانت علی قاسمیؔ
استاذ دار العلوم حیدرآباد
E-mail:
07207326738 Mob:

اسلاف کی زندگی ، ان کی روشن تعلیمات ،ان کے انمٹ نقوش ، دین کے سلسلے میں ان کی جہد مسلسل ، ایثار و قربانی اور فخر و استغناء کے معجون سے تیار ان کی پاکیزہ سیرت ، شب بیداری و آہِ سحر گاہی سے مزین ان کی زندگی کے شب و روز ،تقوی و طہارت اور تواضع و مسکنت سے لبریز ان کا ظاہر و باطن، عام مسلمانوں کے لئے مشعل راہ ،کامیابی کی شاہ کلید ،ترقی کا زینہ ، اور روشن مستقبل کے ضامن ہوتے ہیں-
مزید پڑھیں »

سوشل میڈیا



تلاش
آپ کی رائے؟

جہان اردو کا کونسا/کونسے ورژن آپ ملاحظہ فرماتے ہیں؟

  • نوٹ :ایک سے زائد جواب دینے کی گنجائش ہے

View Results

Loading ... Loading ...
اردو آمیز- طریقہ کار
اگر آپ کو جہان اردو کا نستعلیق میں مشاہدہ کرنا ہو یا اپنے کمپیوٹر پر اردو میں ٹائپ کرنا چاہتے ہیں؟ہاں؟! تو یہاں سے نستعلیق فونٹ اور کی بورڈ ( کلیدی تختہ ) ڈاؤن لوڈ کریں ِ

Windows XP اور Windows 7 اردو آمیز کرنے کا طریقہ کار
موبائل ایپ – Apps
Download from Amazon App Store
Scan the QR-Code to download Android App
Scan the QR-Code to download iPhone App
محفوظات
مقبول ترین مضامین
نیوز لیٹر
نئے مضامین آنے پر مطلع ہونا چاہتے ہیں؟ اگر ہاں!تو اس فارم کو پُر کریں۔
محفوظات
↓