موضوعات ٹیگ ‘شخصیت سازی’

PostHeaderIcon وقت بہت بڑا منصف ہے : – صادق رضامصباحی

صادق رضامصباحی

وقت بہت بڑا منصف ہے

صادق رضامصباحی ،ممبئی
رابطہ نمبر:09619034199

مذہبی ہونابڑی اچھی بات ہے مگرمذہبی ہونے سے قبل یہ سمجھ لینابھی ضروری ہے کہ مذہب کیاہے ،اس کے مطالبے ،تقاضے اوراس کے اثرات کیاہیں۔اگریہ سب سمجھے بغیرہم مذہبی ہوگئے توسمجھ لیجیے ہم سے بڑا مذہب کودھوکہ دینے والاکوئی اورنہیں ہوگاکیوں انسان اس صورت میںخیرکے بجائے شرکی طرف چلاجاتاہے اوراسے پتہ بھی نہیں چلتا۔اسی لیے قرآن کریم میں اللہ نے اپنے مقدس کلام کے متعلق فرمایاکہ ’’اسی سے لوگ ہدایت پائیں گے اوراسی سے گمراہ ہوں گے۔‘‘اس کاکیامطلب ہوا؟مطلب یہ کہ کسی چیزکے مصداق ،اس کے پس منظراورپیش منظرکو سامنے رکھنا نہایت ضروری ہے ورنہ نتائج خطرناک ہوسکتے ہیں-
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon مشکل نہیں ہے کچھ بھی اگر – – – :- فاروق طاہر

فاروق طاہر

مشکل نہیں ہے کچھ بھی اگر – – –

فاروق طاہر
عیدی بازار ،حیدرآباد

09700122826

قانون فطرت اٹل ہے اور یہ کسی کے لئے بھی تبدیل نہیں ہوتا ۔انسان کو وہی ملتا ہے جس کی وہ سعی و کوشش کرتا ہے۔کامیابی ان ہی کو ملتی ہے جو نہ صرف اس کی آرزو وتمنا کرتے ہیں بلکہ اس کے حصول کے لئے انتھک اورمسلسل جد و جہد کو اپنا شیوا و شعار بنالیتے ہیں۔ ۔کامیابی کوئی معجزہ ہے ،نہ ہی یہ اچانک حاصل ہوتی ہے اور نہ از خود کبھی ظہور پذیر ہو ئی ہے بلکہ روز مرہ انجام دیئے جانے والے چھوٹے بڑے اعمال ، افعال اور عادات کی صورت محو سفر رہ کر یہ کامیابی یا ناکامی کی شکل میں ہمارے سامنے آتی ہے۔ برے نتائج کو ہم جہاں ناکامی کہتے ہیں وہیں خوشگوار اور اچھے نتیجے کو کامیابی سے تعبیر کرتے ہیں۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon فن تدریس میں سوال کی اہمیت – – – – – فاروق طاہر

فن تدریس میں سوال کی اہمیت
سوال کرو ایسےکہ جواب نکل آئے

فاروق طاہر
حیدرآباد ۔ دکن

سوال پوچھنا ایک فن ہے ۔ فن تدریس علوم کے فروغ کی خاطر اساتذہ سے ایک ماہر کی طرح سوال کرنے کا مطالبہ کرتی ہے۔موثر تدریس اور معیاری اکتساب کے لئے اساتذہ کو معیاری سوال بنانے اور طلبہ کو مناسب سوال پوچھنے کی تربیت فراہم کرنا ضروری ہوتا ہے۔ مشہو ر مقولہ ہے کہ ’’جو ، سوال نہیں کرتا وہ کچھ علم حاصل نہیں کرتا ۔‘‘اس ضمن میں تھیو ڈور اسٹرک (Theodore Struck) نے نہا یت خوبصورتی سے اپنے ایک جملے سے فن تدریس میں سوال کی اہمیت کو اجاگر کرنے کی کوشش کی ہے۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon صراط مستقیم – – – – ڈاکٹرمحی الدین حبیبی


صراط مستقیم

ڈاکٹرمحی الدین حبیبی
حیدرآباد ۔ دکن
موبائل : 08978155985

’’ہذا صراطی مستقیم‘‘ یہ وہ فرمانِ خداوندی ہے جو رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی زبانِ مبارک سے اس وقت جاری ہوا جب آپؐ نے ’’صراطِ مستقیم‘‘ کی تفہیم کے لیے، سمجھانے کے لیے ایک لکیر کھینچی اور فرمایا: یوں سمجھ لو کہ یہ لکیر اللہ کا ٹھہرایا ہوا راستہ یعنی صراطِ مستقیم ہے۔ اس کے بعد اس لکیر کے دونوں جانب بہت سی تیڑھی ترچھی لکیریں کھینچ دیں اور فرمایا کہ یہ طرح طرح کے راستے ، خودساختہ ہیں اور اُن میں کوئی راستہ نہیں ، جس کی طرف بلانے والا ایک شیطان موجود نہ ہو۔ اس حدیث کی روایت عبداللہ بن مسعود رضی اللہ عنہ نے کی ہے۔ صحیحین ، نسائی، احمد)
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon شخصیت سازی ۔ سیاہی ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ماریہ ماہ وش


شخصیت سازی
سیاہی

ماریہ ماہ وش

ابھی اپنے چھ سالہ بیٹے کو ایک قصہ سنا رہی تھی، قصہ سناتے سناتے کئ باتیں ذہن میں آئیں لیکن ان باتوں کا تعلق بیٹے کو سمجھانے سے قطعئ نہیں تھا۔ان باتوں کا تعلق بڑوں سے یعنی آپ اسے اور مجھ سے تھا۔ان باتوں کو سمجھنے سے پہلے قصہ پڑھ لیں جو میں بیٹے کو سنا رہی تھی۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon مایوس لوگوں کے لیے بقاء کی امید – – – ظہوراحمد دانش


شخصیت سازی
مایوس لوگوں کے لیے بقاء کی امید

تحریر:ظہوراحمد دانش
میڈیاریسرچ انسٹیٹیوٹ

ایک لفظ جو ہم نے پڑھا بھی ہوگا اور سنابھی ہوگا اور اس کے نتائج سے بھی ہم آگاہ ہیں ۔جی ہاں لفظ ’’مایوسی ‘‘یعنی ’’شکستہ دلی‘‘ ۔آج معاشرے میں بہت تیزی کے ساتھ مایوسی پھیلتی چلی جارہی ہے ۔امید اور حوصلہ مندی کی قوت زوال پزیر ہوتی چلی جارہی ہے ۔یہ کیفیت انسان کو جسمانی اور روحانی اعتبارسے بہت سے نقصانات پہنچارہی ہوتی ہے ۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon شخصیت سازی : اک داستان جو بدل دے زندگی-ڈاکٹرظہوراحمد دانش

شخصیت سازی
اک داستان جو بدل دے زندگی

ڈاکٹرظہوراحمد دانش
میڈیا ریسرچ انسٹیٹیوٹ

میرامعمول رہا ہے کہ اپنے انسٹیٹیوٹ میں لیکچر کے بعد طلباء کے ساتھ گپ شپ بھی کرتاتھا۔استاد شاگرد کا باہمی تعلق مزید مضبوط ہوسکے ۔استاد کے لیے شاگر د اپنی اولاد کی طرح عزیزہوتے ہیں ۔ایم ایس سی ،ایم سی ایس ،ایم اے ،ایم بی اے ،ایڈوکیٹ ،اورجامعات و درسگاہوں سے فاضل علماء بھی صحافت کورس کے لیے میرے پاس تشریف لاتے تھے ۔ لیکچر کے کسی نہ کسی موضوع پر باتیں ہی ہوتی چلی جاتی تھیں ۔لیکن جب میں اتنے تعلیم یافتہ لوگوں کو مایوسی کی باتیں کرتا دیکھتاتھا تو حیرت ہوتی تھی کہ یہ طبقہ تو موٹیویشن دینے والا طبقہ ہے ۔یہ تو علم کی روح سے دل کی دنیا کو مسخر کرنے والے لوگ ہیں ۔خیر مثالوں اور کہاوتوں اور کرداروں سے انھیں اس اندھیر نگری سے نکالنے کی اپنے تئیں کوشش کیاکرتاتھا۔انہی دنوں کی بات ہے کہ میں مطالعہ کررہاتھاتو ایک زندگی بدل دینے والی کہانی میرے مطالعہ سے گزری پڑھ کر ایک نئی امنگ ،ایک حوصلوں کا کوء ہمالیہ مل گیا۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon غصہ ۔ خوش حال زندگی کا دشمن نمبر۱

anger

غصہ ۔ خوش حال زندگی کا دشمن نمبر۱

تم کوآتا ہے پیارپرغصہ 
مجھ کوغصہ پہ پیارآتا ہے

ہر جاندار کے کئی دشمن ہوتے ہیں ۔ انسان تو اشرف المخلوقات ہے اس لیے اس کے دشمن بھی ہونا ضروری ہیں ۔ انسان تو اپنی زبان سے کئی ایک دشمن پیدا کرلیتا ہے ۔ یہ جان کر آپ کو حیرت ہوگی کہ انسان کا سب بڑا دشمن خود اس کا غصہ ہے کیوں کہ اسے جتنا نقصان اس کا غصہ پہنچاتا ہے اتنا کسی دشمن کے بس کی بات نہیں۔غصّہ آنا انسانى طبيعت كا فطری حصّہ ہے جو اس وقت پیدا ہوتا ہے جب ہمارے سامنے ہماری خواہش اور توقعات کے کچھ خلاف ہوجائے۔ اس کے علاوہ بعض اوقات بیماری کی بھی وجہ سے مزاج یوں ہوجاتا ہے کہ انسان کو ہر وقت یا ذرا ذرا سی بات پر غصہ آنے لگے
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon نیند نہ دیکھے ٹوٹی کھاٹ ۔ ۔ ۔ علامہ اعجازفرخ

Picture 5نیند نہ دیکھے ٹوٹی کھاٹ 
وہ بیاباں میں ہیں اور گھر میں بہار آئی ہے

علامہ اعجازفرخ – حیدرآباد ۔ دکن
موبائل : 09848080612 –
ای میل :
۔ ۔ ۔ ۔ ۔
نوٹ : سماجی مسائل اور معاشرتی الجھنوں کو بیاں کرتی علامہ کی ایک خوب صورت تحریر جوآپ کوغوروفکرکرنے پرمجبور کردے گی ۔
۔ ۔ ۔ ۔ ۔
روپیہ انسانی زندگی کی اہم ضرورت سہی، لیکن تمام مسائل کا حل نہیں۔فیاض قدرت نے انسان کی تخلیق کے ساتھ ہی اسے جن نعمتوں سے سرفراز کیا ہے‘ وہ نعمتیں از خود اس کی ضروریات زندگی کے لئے کافی ہیں،لیکن طمع جب ہوس کے پر کھول دیتی ہے تو اس پر نعمتوں کے الطاف کم ہوجاتے ہیں۔یہی ہوس ملک گیری بھی ہے، خواہش اقتدار بھی اور اسی کے تئیں ایک انسان دوسرے انسان کے گلے میں غلامی کا طوق ڈال کر جبریہ اسیر کرلیتا ہے۔یہ نفس ہی تو ہے جو انسان سے انسان کی عظمت کو چھین کر اسے غلامی کے آزار میں مبتلاء دیکھ کر مسرت محسوس کرتا ہے اور پھر یہی ہوس گیری بڑھتے بڑھتے شاہوں کی خبط حکمرانی کو فرعونیت میں بدل کر رکھ دیتی ہے۔ذرا سے تفکر کے بعد یہ بات واضح ہوجاتی ہے کہ جابر حکمرانوں کے کوئی نام نہیں ہوتے، صرف زمرہ ہوتا ہے۔اسی طرح سے فرعون، ہامان،شداد،قارون،یہ صرف نام ہی نہیں بلکہ علامتیں بھی ہیں۔فرعون نے اپنی بقائے حکمرانی کی خاطر بچوں کی ایک نسل تہہ تیغ کروادی کہ وہ یہ سمجھتا تھا کہ اس کیبقاء صرف اسی طرح ممکن ہے اور آج تک فرعون بدنام زمانہ ہے۔لیکن اس قاتل کو کیا کیا جائے جوکئی نسلوں کی ذہانت کے قتل عام کے مجرم ہیں اور اس پر بھی ستم یہ ہے کہ وہ قتل عام کرکے بھی سبک نام رہا۔ذہانتیں قتل ہوتی رہیں،اس کی عیار مسکراہٹ گہری ہوتی رہی۔ٹمٹماتے چراغ ہمیشہ اندھیروں ہی کے دشمن نہیں ہوتے،کبھی کبھی چکاچوند روشنی کے بھی دشمن ہوتے ہیں،تاکہ اس کے آگے ان چراغوں کی روشنی بھیک مانگتی نظر آتی ہے۔تب یہ چراغ اندھیروں سے اپنی دوستی کرلیتے ہیں،تاکہ ان کی ٹمٹماتی لَوکام بھرم باقی رہ جائے۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon مثبت سوچ ‘ مقاصد میں کامیابی کی اہم کلید : نعیم جاوید

photo 1 (2)

photo 3 (2)

طالب علم مثبت سوچ کے ذریعے اپنے مقصد میں کامیابی حاصل کریں
ایم وی ایس گورنمنٹ ڈگری کالج میں شخصیت سازی پروگرام

نعیم جاوید  کا خطاب

محبوب نگر۔۳۱ جولائی(ای میل)موجودہ دور دراصل مسابقتی اور سائنس و ٹکنالوجی کا دور ہے ایسے میں طالب علم حصول علم کے ساتھ ساتھ شخصیت سازی پر بھی اپنی توجہہ مرکوز کریں اور اپنی شخصیت کو خوب سے خوب تر بنائیں تاکہ اپنی منزل کے حصول میں آسانی ہواور ایک کامیاب زندگی گزریں ان خیالات کا اظہار جناب نعیم جاویدڈائر کٹرو ٹرینر ہدف(دمام سعود عربیہ) نے آج ایم وی ایس گورنمنٹ ڈگری وپی جی کالج میں شعبہ نظم و نسقِ عامہ کی جانب سے منعقدہ شخصیت سازی کے پروگرام سے کیا۔وہ’’بہانوں سے بہادری کی طرف‘‘عنوان پر مخاطب تھے انہوں نے مزید کہا کہ طلباء کسی بھی کام کی انجام دہی میں بہانوں سے کام نہ لیں بلکہ چستی
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon ایاز کی الماری

ایاز کی الماری

ایاز کی الماری

سلطان محمود غزنوی کے درباریوں نے یہ شکایت درج کروائی کہ بادشاہ سلامت آپ کے غلام ایاز کی ایک الماری ہے یہ اس الماری کو تالا لگا کر رکھتا ہے وہ روزانہ اس الماری کو کھول کر دیکھتا ہے اور کسی دوسرے بندے کو دیکھنے نہیں دیتا ہمارا خیال ہے کہ اس نے آپ کے خزانے کے قیمتی ہیرے اور موتی اس کے اندر چھپا کر رکھے ہوئے ہیں آپ ذرا اس کی تلاشی لیجیے۔
بادشاہ سلامت نے اسی وقت ایاز کو بلوایا اور کہا ایاز کیا تمہاری الماری ہے؟
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon گارا بنانے والا مزدور

 مزدور

گارا بنانے والا مزدور

ایک متاثرکن واقعہ
مرسلہ : عبیرہ خان

ایک نیک شخص کے گھر کی دیوار اچانک گرگئی ۔ اسے بڑی پریشانی لاحق ہوئی اور وہ اسے دوبارہ بنوانے کے لئے کسی مزدور کی تلاش میں گھر سے نکلا اور چوراہے پر جا پہنچا ۔ وہاں اس نے مختلف مزدوروں کو دیکھا جو کام کے انتظار میں بیٹھے تھے ۔ان میں ایک نوجوان بھی تھا جو سب سے الگ تھلگ کھڑا تھا، اس کے ایک ہاتھ میں تھیلا اور دوسرے ہاتھ میں تیشہ تھا ۔
اس شخص کا کہنا ہے کہ، ”میں نے اس نوجوان سے پوچھا، ”کیا تم مزدوری کرو گے؟ ”نوجوان نے جواب دیا،”ہاں!” میں نے کہا،”گارے کا کام کرنا ہوگا۔” نوجوان کہنے لگا،”ٹھیک ہے! لیکن میری تین شرطیں ہیں اگر تمہیں منظور ہوں تو میں کام کرنے کے لئے تیار ہوں،
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon ایسی بھی ہوتی ہیں شادیاں ۔ ۔ ۔ ۔

شادیاں

ایسی بھی ہوتی ہیں شادیاں

مرسلہ : عبیرہ خان

حضرت شیخ شاہ کرمانی رحمتہ اللہ علیہ کی صاجزادی کے لئے بادشاہ کرمان نے نکاح کا پیغام بھیجا۔ شیخ نے کہلا بھیجا کہ مجھے جواب کے لئے تین دن کی کی مہلت دیں۔۔۔۔۔۔۔۔اس دوران وہ مسجد مسجد گھوم کر کسی صالح انسان کو تلاش کرنے لگے۔ ایک لڑکے پران کی نگاہ پڑی جس نے اچھی طرح نماز ادا کی اور دعا مانگی۔ شیخ نے اس سے پوچھا تمھاری شادی ہو چکی ہے؟۔۔۔۔۔۔۔۔۔اس نے نفی میں جواب دیا۔ پھر پوچھا۔۔۔۔۔۔۔۔کیا نکاح کرنا چاہتے ہو؟ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔لڑکی قرآن مجید پڑھتی ہے، نماز روزہ کی پابند ہے، خوبصورت پاکباز اور نیک ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اس نے کہا بھلا میرے ساتھ کون رشتہ کرے گا۔ شیخ نے فرمایا۔ میں کرتا ہوں۔ لو یہ درہم، ایک درہم روٹی، ایک درہم کا سالن اور ایک درہم کی خوشبو، خرید لاؤ۔۔۔۔۔۔۔۔۔اس طرح شاہ کرمانی نے اپنی دختر کا نکاح اس سے پڑھا دیا۔ لڑکی جب شوہر کے گھر آئی تو اس نے دیکھا پانی کی صراحی پر ایک روٹی رکھی ہوئی ہے۔ اس نے پوچھا یہ روٹی کیسی ہے؟
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon شیطان کی نیکی

شیطان

شیطان کی نیکی

کہتے ہیں کہ ایک شخص صبح سویرے اُٹھا، صاف کپڑے پہنے اور مسجد کی طرف ہولیا تاکہ فجرکی نمازباجماعت ادا کرنے کی سعادت حاصل کرے۔ راستے میں ٹھوکرلگی اور گر پڑا، کپڑے کیچڑ سے بھر گئے وہ واپس گھر آیا، لباس بدل کرپھر مسجد کی طرف روانہ ہوا۔ پھر ٹھیک اُسی مقام پر ٹھوکر لگی اور گرپڑا ۔پھر ایک بار گھرآ کرلباس بدلا اور پھر مسجد کی طرف روانہ ہولیا-
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon ایک چڑیا کی تین نصیحتیں ۔ حکایتِ رومی

حکایات رومی

ایک چڑیا کی تین نصیحتیں
حکایتِ رومی

ایک شخص نے چڑیا پکڑنے کےلئے جال بچھایا.. اتفاق سےایک چڑیا اس میں پھنس گئی اور شکاری نے اسے پکڑ لیا..
چڑیا نے اس سے کہا.. ” اے انسان ! تم نے کئی ہرن ‘ بکرے اور مرغ وغیرہ کھاۓ ھیں ان چیزوں کے مقابلے میں میری کیا حقیقت ھے.. ذرا سا گوشت میرے جسم میں ہے اس سے تمہارا کیا بنے گا..؟ تمہارا تو پیٹ بھی نہیں بھرے گا.. لیکن اگر تم مجھے آزاد کردو تو میں تمہیں تین نصیحتیں کرونگی جن پر عمل کرنا تمہارے لئے بہت مفید ھوگا..
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon اصل سکندر اعظم کون؟

سکندرآعظم

اصل سکندر اعظم کون؟

سکندر اعظم کون تھا، مقدونیہ کا الیگزینڈر یا تاریخ اسلام کے حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ۔ یہ وہ سوال ہے، جس کا جواب دینا دنیا بھر کے مورخین پر فرض ہے۔ آج ایس ایم ایس کا دور ہے، موبائل کا میسجنگ سسٹم چند سیکنڈ میں خیالات کو دنیا کے دوسرے کونے میں پہنچادیتا ہے۔ جدید دور کی اس سہولت سے اب قارئین اور ناظرین بھی بھر پور فائدہ اٹھاتے ہیں۔ گزشتہ روز کسی صاحب نے پیغام بھجوایا ’’کاش آپ نے حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ پر کالم لکھا ہوتا۔‘‘ پیغام پڑھنے کے بعد اس وقت سوچ رہا ہوں کہ مقدونیہ کا الیگزینڈر سکندر اعظم تھا یا حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ۔ ہم نے بچپن میں پڑھا تھا مقدونیہ کا الیگزینڈر 20سال کی عمر میں بادشاہ بنا۔ 23سال کی عمر میں مقدونیہ سے نکلا، اس نے سب سے
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon اللہ کے منتخب بندے

اللہ کے منتخب

اللہ کے منتخب بندے

ایک دفعہ حضرت عمرؓ بازار سے گزر رہے تھے، وہ ایک شخص کے پاس گزرے جو دعا کر رہا تھا، "اے اللہ مجھے اپنے چند لوگوں میں شامل کر، اے اللہ مجھے اپنے چند لوگوں میں شامل کر”۔
عمرؓ نے اس سے پوچھا، یہ دعا تم نے کہاں سے سیکھی؟ وہ بولا، اللہ کی کتاب سے، اللہ نے قرآن میں فرمایا ہے
"اور میرے بندوں میں صرف چند ہی شکر گزار ہیں۔”(القرآن 34:13)
عمرؓ یہ سن کر رو پڑے اور اپنے آپ کو نصیحت کرتے ہوئے بولے،”اے عمر ! لوگ تم سے زیادہ علم والے ہیں، اے اللہ مجھے بھی اپنے چند لوگوں میں شامل کر۔”
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon کچے دھاگے ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ !

کچے دھاگے

کچے دھاگے

ایک بیٹے نے باپ سے پوچھا – پاپا یہ ‘کامیاب زندگی’ کیا ہوتی ہے؟
والد، بیٹے کو پتنگ اڑانے لے گئے.
بیٹا باپ کو غور سے پتنگ اڑاتے دیکھ رہا تھا …
تھوڑی دیر بعد بیٹا بولا،
پاپا .. یہ دھاگے کی وجہ سے پتنگ اور اوپر نہیں جا پا رہی ہے، کیا ہم اسے توڑ دیں !!
یہ اور اوپر چلی جائے گی …
والد نے دھاگہ توڑ دیا ..
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon وقت کا پیغام طلباء کے نام -@- مہتاب عالم فیضانی

وقت ۔ مہتاب فیضانی

مہتاب فیضانی

وقت کا پیغام طلباء کے نام -1

مہتاب عالم فیضانی- احمد آباد گجرات
شعبۂ اردو- اردو یونیور سٹی ۔ حیدرآباد

وقت کا رویہ، اسکا ہمارے ساتھ سلوک، اور اسکے ساتھ ہمارا برتاؤ کیا ہے یہ شاید مجھے بتا نے کی ضرورت نہیں ہے۔ وہ اپنے قدردانوں کا بڑا قدرداں اور اپنے غیر متعلقین کا سب سے بڑا مخالف و سب سے بڑا دشمن ہے۔ اہل دانش حضرات نے وقت کے ایک ایک لمحہ کو دنیا کی سب سے بڑی دولت سمجھ کر اسکو استعمال میں لاکر بڑے اور بہت بڑے بن گئے۔ انہو ں نے ایک ایک گھڑی پڑھنے میں صرف کی ایک ایک پل کو فائدے کی چیزوں میں لگایا، اسلئے عربی ایک کہاوت ہے ’’ کہ وقت تلوار کے مانند ہے اگر تم اسکو نہیں کاٹو گے تو وہ تمکو کاٹ دیگا،، اور ایک جگہ کہا ہے۔ ’’الوَقْت کذَََََََّہبِ،،کہ وقت سونے کی طرح قیمتی ہے۔ یعنی وقت سونے کی طرح قیمتی ہے بلکہ میں تو کہوں گا کہ وقت کی کوئی قیمت ہی نہیں لگا سکتا۔ایک واقعہ ہے کہ کوئی بزرگ راستے جا رہے تھے تو چند لوگوں کو آپس میں بیجا گفتگو کرتے دیکھا تو انہوں نے کہاکہ کاش وقت کو خریدا جا سکتا تو میں انکو بھاری قیمت دیکر ان سے وقت خرید لیتا۔ ذیل میں وقت بچانے کے چند طریقے بیان کئے جا رہے ہیں۔ جس پر عمل کر کے آپ اپنے وقت کو ضائع ہونے سے بچا سکتے ہیں۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon نکاح میں حائل تمد ن کی جھڑ بیریاں -@- نعیم جاوید

نعیم جاوید

نعیم جاوید

نکاح میں حائل تمد ن کی جھڑ بیریاں

نعیم جاوید۔۔ دمام سعودی عرب
Email:

وہ اُمت جو زندگی کی تنظیم ایک وحدت ِ خیال پر کرچکی۔ جس کی خانگی زندگی کے چشمہ سے پوری خارجی زندگی کی آبیاری ہوتی ہو وہ کس طرح کسی مسئلہ کو سمجھنے میں ناکام ہوسکتی ہے۔ کیونکہ اساسی نظریات پر جو قوم متحد ہے ۔جس کے نزدیک پوری کائینات ایک اکائی ہے۔ ”حیات“ اور ”موت“ سفر کی منزلوں کے نشان سے زیادہ کچھ نہیں۔
اب آئیے یہ دیکھتے ہیں وہ تمدّنی معاہدہ جسے ہم ”عقد ِ نکاح“ کہتے ہیں وہ کس اعتبار سے اوروں کے تمدنی معاہدے کی
اساس پر جی سکتا ہے۔جبکہ دنیا کے اس تہذیبی جنگل میں تمدنی لٹیروں نے نظریاتی میدان کی کئی چوکیاں ہم سے چھین لی ہیں۔ اسکی تہذیبی یلغار کی زد پر ہماری آخری چوکی ہمارا گھر ہے۔جسکے بعد ہماری شناخت مٹ جائیگی۔ہمارے اس آخری ٹھکانے پر حملہ ہوچکا ہے۔ جہاں ہماری بہنوں اور بیٹیوں کے سروں سے حیا کی چادریں سرک رہی ہیں اور وہ چلاچلا کر ہم سے تحفظ مانگ رہی ہیں۔۔۔اسی رفتار سے حیاباختہ تہذیبی ٹولہ حملہ کررہا ہے۔۔۔ایسے میں کیا صرف کوئی ایک باحمیت اور غیرت مند دستہ ، دشمن کی فوج کے آگے بچھ کرراستہ روک دیگا۔۔
نہیں۔۔۔ہر گز نہیں۔۔
مزید پڑھیں »

سوشل میڈیا



تلاش
آپ کی رائے؟

جہان اردو کا کونسا/کونسے ورژن آپ ملاحظہ فرماتے ہیں؟

  • نوٹ :ایک سے زائد جواب دینے کی گنجائش ہے

View Results

Loading ... Loading ...
اردو آمیز- طریقہ کار
اگر آپ کو جہان اردو کا نستعلیق میں مشاہدہ کرنا ہو یا اپنے کمپیوٹر پر اردو میں ٹائپ کرنا چاہتے ہیں؟ہاں؟! تو یہاں سے نستعلیق فونٹ اور کی بورڈ ( کلیدی تختہ ) ڈاؤن لوڈ کریں ِ

Windows XP اور Windows 7 اردو آمیز کرنے کا طریقہ کار
موبائل ایپ – Apps
Download from Amazon App Store
Scan the QR-Code to download Android App
Scan the QR-Code to download iPhone App
محفوظات
مقبول ترین مضامین
جہان اردو تاریخی آئینے میں
  • 2016-09-22 No articles on this date.
نیوز لیٹر
نئے مضامین آنے پر مطلع ہونا چاہتے ہیں؟ اگر ہاں!تو اس فارم کو پُر کریں۔
محفوظات
↓