موضوعات ٹیگ ‘Deccani Research’

PostHeaderIcon دکن کے ممتاز محقق پروفیسر محمد علی اثرؔ : – ڈاکٹرعزیز سہیل

پروفیسر محمد علی اثرؔ

دکن کے ممتاز محقق پروفیسر محمد علی اثرؔ

ڈاکٹرعزیز سہیل
لیکچرار ایم وی ایس گورنمنٹ ڈگری کالج محبوب نگر

حیدرآباد دکن کی سرزمین سے ایسے نامور شخصیات پیدا ہوئے ہیں جنہوں نے اردوادب میں اپنے تخلیقی کارناموں کی بناپرشہرت حاصل کی ہے اوراردو کے سرمایہ میں بے انتہا اضافہ کیا ہے۔ ان نامور شخصیات میں ایک نام جامعہ عثمانیہ کے فرزند پر وفیسر محمد علی اثرؔ کا بھی ہے۔جنہوں اردو شعر وادب میں وہ کارہائے نمایاں خدمات انجام دے ہیں جس کی بدولت اردو دنیا ان کو صدیوں تک یاد رکھے گی۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon دکنی میں سیرت النبیؐ کے منظوم ماخذات@پروفیسر مجید بیدار

 دکنی میں سیرت النبی

پروفیسر مجید بیدار، سابق صدر شعبۂ اردو جامعہ عثمانیہ حیدرآباد
دکنی میں سیرت النبیؐ کے منظوم ماخذات

سیرتِ محمدیؐ کے مختلف گوشوں کو نمایاں کرنے کا وصف دنیا کی ہر زبان میں جاری و ساری ہے۔ اہلِ زبان ہونے کی حیثیت سے سب سے پہلے عربی کے شاعروں اور ادیبوں نے سیرت النبی صلی اللہ علیہ وسلم کے فن کی طرف خصوصی توجہ دی، جس کے بعد دیگر ایشیائی زبانوں میں فارسی کو یہ اختصاص حاصل ہے کہ اس زبان کے مصنّفین نے سیرت النبیؐ کی بھرپور نمائندگی انجام دی، پھر ایشیائی زبانوں سے سیرت النبیؐ کا فن ترقی کرتا ہوا یوروپی زبانوں میں پھیلنے لگا اور آج کی ترقی یافتہ دنیا میں یہ حقیقت واضح ہوجاتی ہے کہ سیرت النبیؐ پر جتنی کتابیں عالمی زبانوں میں تحریر کی گئی ہیں اتنا بڑا ذخیرہ شاید ہی کسی عالمی شخصیت کی سوانح کے لیے مختص کیا گیا ہو۔ ہندوستان کی سرزمین میں مسلمانوں کے قافلے جن جن علاقوں سے گذرتے گئے ان علاقوں میں سیرت کی خوشبو اپنی مہک پھیلاتے ہوئے انسانی دل و دماغ کو مسخر کرتی رہی۔ سرزمین ہندوستان میں طویل عرصہ تک فارسی کو سرکاری زبان کا درجہ حاصل رہا، لیکن مسلمان علماء اور صوفیائے کرام کے قافلے جب دکن کی سرزمین میں اپنے قدم مضبوط کرچکے تو اس علاقہ میں مقامی باشندوں سے مسلمانوں کی بھائی چارگی کے نتیجہ میں ایک نئی زبان عالمِ وجود میں آئی، جسے دکنی کے نام سے یاد کیا جاتا ہے اور یہ دکنی زبان سارے جنوبی ہند میں علاء الدین خلجی کے دکن پر حملے ۱۲۹۴ء سے شروع ہوکر دکن کی پانچ سلطنتوں کے اختتام یعنی ۱۶۸۹ء تک جاری و ساری رہی اور اسی زبان میں شاعری ہی نہیں ،
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon جدید دکنی شاعری ۔ ایک جا ئزہ

جدید دکنی شاعری

حیدرآباد دکن

جدید دکنی شاعری

ڈاکٹرمحمد عظمت اللہ
لیکچرر۔ گورنمنٹ جونئیرکالج۔

اردو زبان کی تر قی میں عر بی اور فا ر سی زبانوں کا قا بلِ قدر حصہ رہا ہے ۔ ان دو نوں زبانو ں کے امتزاج سے ار دو زبا ن کا دامن لسا نی اعتبار سے و سیع ہو گیا ۔ صر ف عر بی اور فا رسی ہی نہیں اردو کی پیشتر و دکنی زبان نے بھی کئی صدیوں تک ار دو کی خدمت کی ہے ۔ دکنی زبان نے اردو کا ڈھا نچہ اور لب و لہجہ متعین کیا نہ صر ف دکنی زبان بلکہ یہاں کی تہذیب و ثقا فت نے بھی اردو پر احسان کیا ہے اسی بنا پر اس کو اردو ئے قدیم، کہا جا تا ہے ۔ شما لی ہندوستا کے شعراء کو گوار نہ تھا کہ وہ ایک مقامی بولی میں اپنے جذبات و احسات کا اظہار کر یں ۔ لیکن و لیؔ کے سفرِ دہلی کے بعد انہیں احساس ہو ا کہ اردو ئے قدیم میں بھی اعلیٰ در جہ کی شاعر ی ممکن ہے ۔ اس دور کے
فا ر سی شعرا ء خود چا ہتے تھے کہ وہ فا رسی کے علاوہ ایک ایسی زبان میں شاعر ی کر یں جس سے عوام کے دلو ں تک ان کی رسائی ہو سکے ۔ ولیؔ کا یہ ادبی سفر اردو زبان کے لئے جتنا سُود مند تھا دکنی زبان کے لئے وہ اس سے کہیں زیادہ نقصان دہ ثا بت ہو ا۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon دکنی تحقیق کا آغاز و ارتقا ۔از۔ پروفیسر محمد علی اثر

تحقیق ‘  ۔نا معلوم حقائق کو معلوم کرنا‘معلوم شدہ حقائق کی توثیق یا تردید کرنا ‘ کھوج ‘ تلاش‘ جستجواورجانچ کا نام ہے
دکنی تحقیق کا آغاز و ارتقا پر پروفیسر محمد علی اثر کا آن لائن لیکچر ملاحظہ ہو۔

مزید پڑھیں »

سوشل میڈیا



تلاش
آپ کی رائے؟

جہان اردو کا کونسا/کونسے ورژن آپ ملاحظہ فرماتے ہیں؟

  • نوٹ :ایک سے زائد جواب دینے کی گنجائش ہے

View Results

Loading ... Loading ...
اردو آمیز- طریقہ کار
اگر آپ کو جہان اردو کا نستعلیق میں مشاہدہ کرنا ہو یا اپنے کمپیوٹر پر اردو میں ٹائپ کرنا چاہتے ہیں؟ہاں؟! تو یہاں سے نستعلیق فونٹ اور کی بورڈ ( کلیدی تختہ ) ڈاؤن لوڈ کریں ِ

Windows XP اور Windows 7 اردو آمیز کرنے کا طریقہ کار
موبائل ایپ – Apps
Download from Amazon App Store
Scan the QR-Code to download Android App
Scan the QR-Code to download iPhone App
محفوظات
مقبول ترین مضامین
نیوز لیٹر
نئے مضامین آنے پر مطلع ہونا چاہتے ہیں؟ اگر ہاں!تو اس فارم کو پُر کریں۔
محفوظات
↓