موضوعات ٹیگ ‘Book Release’

PostHeaderIcon کتاب’’طلبہ کے تین دشمن‘‘کی ڈاکٹر اسلم پرویز نے رسم رونمائی کی :- رپورتاژ :محسن خان


رپورتاژ :محسن خان
موبائیل:09397994441

فاروق طاہر کی کتاب’’ طلبہ کے تین دشمن ‘‘
ڈاکٹراسلم پرویز وائس چانسلر مانو کے ہاتھوں رسم اجرا

ڈاکٹراسلم پرویز ‘پروفیسر وہاب قیصر‘ پروفیسرفاطمہ پروین‘
ڈاکٹرعابد معزاور ڈاکٹراسلام الدین مجاہد کے خطابات

سرور علم ہے کیفِ شراب سے بہتر
کوئی رفیق نہیں ہے کتاب سے بہتر
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon ڈاکٹر عبدالقیوم کی کتاب’’ سیاسی سماجیات ‘‘کی رسم اجراء


ڈاکٹر عبدالقیوم کی کتاب
’’ سیاسی سماجیات ‘‘کی رسم اجراء

حیدرآباد (راست) 12ڈسمبر۔ڈاکٹر عبدالقیوم اسوسیٹ پروفیسر شعبۂ نظم ونسقِ عامہ مولاناآزاد نیشنل اردو یونیورسٹی حیدرآباد کی تازہ تصنیف’’ سیاسی سماجیات ‘‘کی رسم اجراء14 ڈسمبر بروز جمعرات کو ڈی ڈی ای آڈیٹوریم ،مولانا آزاد یونیورسٹی حیدرآباد میں منعقد ہونے والی پہلی کل ہند سماجی کانگریس میں انجام پائے گی ۔ ایم اے سیاسیات اور سماجیات کے طلبہ کے لیے عرصہ دراز سے اردومیں ا س مضمون کی کتاب کی کمی محسوس کی جارہی تھی گو کہ یہ مضمون 1980ء سے ہندوستان کی جامعات میں پڑھایا جارہا تھا اس کے باوجود اس مضمون میں ہندوستانی اور انگریزی زبانوں میں کتاب کی کمی ہے
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon علامہ اعجاز فرخ کی کتاب ’’ مرقعِ حیدرآباد ‘‘ کی رسمِ اجرا


کتاب ’’مرقعِ حیدرآباد‘‘ کی رسمِ اجرا

مصنف : علامہ اعجاز فرخ

ایک طویل انتظار کے بعد آخرکار علامہ اعجاز فرخ صاحب قبلہ کی کتاب ’’ مرقع حیدرآباد ‘‘ کی رسم رونمائی 18 ستمبر 2017 کی شام چھ بجے بمقام نہرو آڈیٹوریم، مدینہ ایجوکیشن سینٹر، نامپلی، حیدرآباد مقرر ہے۔ کتاب کا رسم اجرا جناب محمد محمود علی صاحب، نائب وزیرِ اعلیٰ، حکومتِ تلنگانہ انجام دیں گے۔ تلنگانہ اسٹیٹ اردو اکیڈمی کے زیر اہتمام منعقد ہونے والی اس تقریب کی صدارت جناب جعفر حسین معراج کریں گے۔ مہمانانِ خصوصی میں ڈاکٹر کے۔ کیشو راؤ، جناب بنڈارو دتاتریہ، جناب اے۔ کے۔ خان، جناب ایم۔ ایس۔ پربھاکر راؤ، جناب سید عمر جلیل اور محترمہ ممتا گپتا ہوں گے۔
پروفیسر ایس۔اے۔شکور ڈائرکٹر/ سکریٹری، تلنگانہ اسٹیٹ اردو اکیڈمی نے تقریبِ رسمِ اجرائے کتاب ’’مرقعِ حیدرآباد‘‘ میں پابندیٔ وقت کے ساتھ شرکت کی خواہش کی ہے۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon محمدنذیراحمد اورنسیم سلطانہ کی تصانیف کا رسم اجرا -: محسن خان

’’الیکٹرانک میڈیا میں اردو زبان وادب کا فروغ‘‘اور محمدنذیر احمد کی کتاب’’اردوافسانو ں میں اساطیری عناصر کا تنقیدی جائزہ‘‘ کاپروفیسر مظفر شہ میری اورد دیگرمہمانوں کے ہاتھوں رسم اجراء عمل میں آیا۔
جناب محمدنذیر احمد اور ڈاکٹر نسیم سلطانہ کی تصانیف کا رسم اجرا

اردوافسانو ں میں اساطیری عناصر کا تنقیدی جائزہ
مصنف: محمد نذیر احمد

الیکٹرانک میڈیا میں اردو زبان وادب کا فروغ
مصنفہ: ڈاکٹر نسیم سلطانہ

رپورٹ:محسن خان
ریسرچ اسکالر مانو حیدرآباد

عصر حاضر میں اردو کے فرغ کے سلسلے میں شہر حیدر آباد کو عالمی سطح پر اولیت حاصل ہے یہاں اردو کی پہلی یونیورسٹی ’’جامعہ عثمانیہ‘‘ قائم ہے ساتھ ہی اردو کی مرکزی یونیورسٹی ’’مولاناآزاد نیشنل اردو یونیورسٹی ‘‘قائم ہے جہا ں اعلی تحقیقی کام ہور ہا اس کے علاوہ یونیورسٹی آف حیدرآباد جو سنٹرل یونیورسٹی ہے وہاں بھی اردو کا شعبہ قائم ہے اسی شعبہ سے فارغ ڈاکٹرنسیم سلطانہ اور عثمانیہ یونیورسٹی سے وابستہ جناب نذیرصاحب کی تصانیف کا رسم اجراء 22اپریل بروز ہفتہ’’ میڈیا پلس ‘‘اڈیٹوریم‘ گن فاونڈری حیدرآباد میں انجام پایا ۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon ’جنوبی ہند میں ڈھولک کے گیتوں کی روایت‘کی تقریب رسمِ اجراء

dhoolak geet

ثمینہ بیگم کی کتاب
’’جنوبی ہند میں ڈھولک کے گیتوں کی روایت‘‘ کی تقریب رسمِ اجراء

ثمینہ بیگم کی کتاب’’جنوبی ہند میں ڈھولک کے گیتوں کی روایت‘‘کی تقریب رسمِ اجراء کل /26جنوری محبوب حسین جگر ہال‘ روزنامہ سیاست عابڈس حیدرآباد میں منعقد ہوئی جس کی صدارت پروفیسر ایس اے شکور ڈائرکٹر/سکریٹری اردوا کیڈیمی تلنگانہ اسٹیٹ نے کی اور کتاب کی رسمِ اجراء انجام دی۔ اپنی تقریر میں انھوں نے ثمینہ بیگم کی محنت اور کاوش کو سراہا اور کہا کہ یہ کتاب ڈھولک کے گیتوں کی اہمیت قائم کرنے میں نہایت کامیاب ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ اس موضوع کو آگے بڑھاتے ہوئے پی ایچ ڈی کی سطح پر بھی تحقیقی کام ہونا چاہئے کیونکہ ہم ترقی کے دور میں بے حد آگے بڑھنے کے باوجود کبھی کبھی لوٹ کر پیچھے کی طرف مڑ کر ماضی کی روایتوں کو بھی دیکھنا چاہتے ہیں۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon دیوانِ رباعیات ’’احسا س وادراک‘‘کی رسمِ اجرا

  Deewan e Rubaiyat

دیوانِ رباعیات ’’احسا س وادراک‘‘(ڈاکٹرمقبول احمد مقبول) کی رسمِ اجرا
انجمن ترقی اردوہند(شاخ) گلبرگہ کے زیرِ اہتمام

گلبرگہ :15/نومبر2015(راست) تخیل، شاعری کا جز ولا ینفک ہے لیکن خارجی عوامل بھی تخلیقی عمل میں شامل رہتے ہیں۔مزید یہ کہ شاعری قاری سے راست مکالمہ نہیں کرتی بلکہ شاعری ایجازو اختصار اور الفاظ کے خلاقانہ استعمال کا نام ہے۔ ان خیالات کا اظہار پروفیسر حمید سہروردی نے انجمن ترقی اردو ہند (شاخ) گلبرگہ کے زیر اہتمام منعقدہ معروف شاعر ڈاکٹر مقبول احمد مقبول کی دیوانِ رباعیات ’احساس و ادراک‘ کے جلسہ رسم اجرا کے موقع پر اپنے صدارتی خطاب میں کیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ فخر کی بات ہے کہ مقبول احمد مقبول دکن کے دوسرے شاعر ہیں جن کا دیوان رباعیات شائع ہوا ہے ۔ ان کی رباعیات فنی پختگی اورفکری گہرائی کی حامل ہیں۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon ادارہ ادب اسلامی کا مشاعرہ ۔ تصنیف’’متاعِ منان‘‘ کی رسم جراء

ادارہ ۱

ادارہ ۲

جڑچرلہ میں ادارہ ادب اسلامی کے مشاعرہ کا کامیاب انعقاد

ڈاکٹر سلیم عابدی نے تصنیف’’متاعِ منان‘‘ کی رسم جراء انجام دیا۔

جڑچرلہ۔(راست)جڑچرلہ میں ادارہ ادب اسلامی کے سنجیدہ و مزاحیہمشاعرہ کا کامیاب انعقاد عمل میں آیا۔ڈاکٹر سلیم عابدیؔ کے ہاتھوں’’متاع منانؔ ‘‘(شاعر محبت علی منانؔ )تصنیف کارسم اجراء انجام پایا۔ اس موقع پراپنے صدارتی خطاب میں ڈاکٹر سلیم عابدی نے شاعر محبت علی منانؔ کی تعریف بیان کی اور انہیں مخلص شاعرقرار دیا۔اور کہا کہ منان ؔ کے پاس انکساری اور سادگی پائی جاتی ہے۔ وہ زندگی کی حقیقتوں کو اپنے کلام میں بڑی خوبی سے اجاگر کرتے ہیں ۔ وہ چار دہوں سے شاعری کررہے ہیں۔ منان ؔ حق پسند شاعر بھی ہے۔ڈاکٹر نادرالمسدوسی نے اپنے خطاب میں محبت علی منانؔ کو مبارکباد پیش کی اور ان کے فن پر روشنی ڈالی اور انہیں منکسر المزاج شاعر قرار دیا۔اور کہا کہ محبت علی منان شاعری کے میدان میں جہد مسلسل،لگن ،ذوق اور شوق
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon خواجہ شیدا کے مجموعہ کلام’’دیوانِ شیدا ‘‘کی رسمِ اجرا

رسم اجرا

عبد المجید خواجہ شیداؔ کے مجموعہ کلام ’’دیوانِ شیدا ‘‘ کی رسمِ اجرا کی تقریب کا انعقاد

بتاریخ۳۰ /مارچ۲۰۱۵ء ، بروزپیر ، وقت ۳بجے دن ، مرکزی لائبریری ، آڈیٹوریم ،مانو ، میں عبد المجید خواجہ شیداؔ کے مجموعہ کلام ’’دیوانِ شیدا ‘‘کی تقریب رسمِ اجرا کا انعقاد عمل میں آیا۔جلسے کا آغازتالئ قرآن مہتاب عالم کی تلاوتِ کلام پاک سے ہوا۔ڈاکٹر ابوالکلام،صدر شعبہ اردو،مانو نے صدر جلسہ ،مہمان خصوصی،مہمان اعزازی اور مبصرین کا تعارف کرایااورمع حاضرین جلسہ ان کا استقبال کیانیزانہوں نے عبدالمجید شیدا کی شخصیت کے ہمہ جہت پہلوؤں پر روشنی ڈالی اور کہاکہ وہ بہت اچھے وکیل، ماہر تعلیم، عالم دین ، ذولسان، مجاہد آزادی اور معتبر شاعر تھے۔ان کی شخصیت ہمارے لیے قابل تقلید ہے۔پروفیسر بیگ احساس ،سابق صدر شعبۂ اردو ، یونیورسٹی آف حیدرآبادنے دیوان شیدا پر تبصرہ کرتے ہوئے ان کی شاعرانہ خصوصیات کو مثالوں سے واضح کیااور کہا کہ وہ سیاست کو بزمِ شعر میں لے جانے کے قائل نہیں تھے، ان کے پاس کلاسیکی رنگ تغزل پایا جاتا ہے ۔ان کی شاعری میں روایتی اندازپایاجاتاہے۔
مزید پڑھیں »

PostHeaderIcon کتاب ‘‘میر کی غزل گویٔ کا تنقیدی مطالعہ‘‘ کی رسمِ رونمایٔ

meer
محفلِ رسمِ رؤنمایٔ میں آپ تمام کا استقبال ہے۔
کتاب ۔ میر کی غزل گویٔ کا تنقیدی مطالعہ
مصنف ۔ راشد آزر
بہ دست ۔سید جناب تراب الحسن آی اے ایس
مقام ۔ گلشنِ حبیب۔اردو ہال۔حمایت نگر۔حیدرآباد
وقت ۔ ۱۴ فروری ۔شام ۶۔۳۰بجے

سوشل میڈیا



تلاش
آپ کی رائے؟

جہان اردو کا کونسا/کونسے ورژن آپ ملاحظہ فرماتے ہیں؟

  • نوٹ :ایک سے زائد جواب دینے کی گنجائش ہے

View Results

Loading ... Loading ...
اردو آمیز- طریقہ کار
اگر آپ کو جہان اردو کا نستعلیق میں مشاہدہ کرنا ہو یا اپنے کمپیوٹر پر اردو میں ٹائپ کرنا چاہتے ہیں؟ہاں؟! تو یہاں سے نستعلیق فونٹ اور کی بورڈ ( کلیدی تختہ ) ڈاؤن لوڈ کریں ِ

Windows XP اور Windows 7 اردو آمیز کرنے کا طریقہ کار
موبائل ایپ – Apps
Download from Amazon App Store
Scan the QR-Code to download Android App
Scan the QR-Code to download iPhone App
آرکائیوز
مقبول ترین مضامین
جہان اردو تاریخی آئینے میں
  • 2017-01-22 No articles on this date.
نیوز لیٹر
نئے مضامین آنے پر مطلع ہونا چاہتے ہیں؟ اگر ہاں!تو اس فارم کو پُر کریں۔
آرکائیوز
↓